Summary & text of the petition filed by the PML-N Leader Marvi Memon against PIA. (Urdu)

اسلام آباد (    )

پاکستان مسلم لیگ (ن) کی رہنماءماروی میمن نے سپریم کورٹ سے استدعا کی ہے کہ پی آئی اے انتظامیہ کی نااہلی اورکرپشن کی وجہ سے عوام الناس کا پی آئی اے جوکہ واحدقومی ائرلائن ہونے کی وجہ سے سفرکرنے میں اعتماد بری طرح مجروح ہواہے اورمزیدبراں عوام الناس کی زندگی کوبھی خطرات لاحق ہیں ۔انہوں نے سپریم کورٹ سے استدعا کی ہے کہ پی آئی اے کی موجودہ دگردوں صورتحال کوبہتربنانے کےلئے مدعاعلہیا ن کو طلب کرکے معاملے کی تحقیقات کرائی جائیں ۔ماروی میمن نے پی آئی اے کےخلاف سپریم کورٹ میں آئین کے آرٹیکل 183(3)کے تحت مفادعامہ کےلئے پیٹیشن دائرکی ہے جس میں سیکرٹری دفاع،وزارت دفاع،سابق وزیردفاع احمدمختار،ایم ڈی پی آئی اے،چیرمین پی آئی اے نویدقمرسلمان ،وزارت قانون وپارلیمانی اموراورسول ایوی ایشن کوفریق بنایاہے

ماروری میمن نے ےہ پیٹیشن مورخہ 12جولائی 2012ءکوکراچی ائرپورٹ پرپیش آنے والے واقعہ کوبنیادبناتے ہوئے سپریم کورٹ میں مذکورہ دائرکی ہے ۔پیٹیشن میں موقف اختیارکیاگیاہے کہ پروازپی کے 301ساڑھے چارگھنٹے تک کراچی ائرپورٹ پرتاخیرکاشکارہوئی تھی اوراس دوران 500سے زائد مسافرشدید ذہنی کوفت کاشکاررہے ۔اس موقع پرمسافر وں نے ماروی میمن کی سربراہی میں چیف جسٹس آف پاکستان سے معاملے کا نوٹس لینے کامطالبہ کیاتھا۔پیٹیشن میں مدعاعلیہاءنمبر 1مسڑنویدقمر،چیرمین پی آئی اے کاقومی اسمبلی میں مس کی گئی تاخیری پروازو ںکی تعداد کابھی حوالہ دیاہے جس میں نویدقمرنے اعتراف کیاتھاکہ گزشتہ 3ماہ کے عرصے میں 12184پروازوں میں سے 4345پروازیں تاخیرکاشکارہوئیں ،علاوہ ازیں مدعاعلیہاءنمبر2احمدمختارسابق وزیردفاع کے ایک نجی ٹی وی کودیئے گئے انٹرویو کا بھی حوالہ دیاگیاہے جس میں انہوں نے پی آئی اے کی کارکردگی کوشرم ناک قراردیاتھااوراس بات کا اعتراف کیاتھاکہ پی آئی اے میں بڑے پیمانے پرکرپشن کی جارہی ہے ۔پیٹیشن میں پی آئی اے کی گلگت بلتستان کی طرف جانیوالی پروازوں کی آئے روزخراب موسم کے نام پرمعطلی کوبھی انتظامیہ کی نااہلی اوربدعنوانی کاشاخسانہ قراردیاگیاہے ۔