Senator Mushahidullah Khan to stop charecter assassination and sit on the table talk.

عمران خان کو گرفتار ہونے کا بھی شدید خوف ہے اور سیاسی مستقبل بھی گرفتاری میں تلاش کر رہے ہیں۔ سینیٹر مشاہداللہ خان
عمران خا ن دوسروں کو قانون کی پاسداری کا سبق پڑھاتے تھکتے نہیں لیکن خود عدالت کا سامنا کرنے سے گریز کرتے ہیں۔ سینیٹر مشاہدا للہ خان
عمران خان کو سیاست کے ڈبل شاہوں نے کہیں کا نہیں چھوڑا ۔سینیٹر مشاہداللہ خان
عمران خان کو انصاف لینا ہے تو عدالت کا احترام اور ان کے آگے سر جھکانا سیکھیں ۔ سینیٹر مشاہداللہ خان
مریم نوازشریف کی اپنے عہدے سے رضاکارانہ علیحدگی سے حکومت کو اخلاقی فتح حاصل ہوئی ۔سینیٹر مشاہداللہ خان

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات سینیٹر مشاہداللہ خان نے کہا ہے کہ عمران خان کو گرفتار ہونے کا بھی شدید خوف ہے اور سیاسی مستقبل بھی گرفتاری میں تلاش کر رہے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ عمران خا ن دوسروں کو قانون کی پاسداری کا سبق پڑھاتے تھکتے نہیں لیکن خود عدالت کا سامنا کرنے سے گریز کرتے ہیں۔ سینیٹر مشاہدا للہ خان نے کہا ہے کہ عمران خان کو سیاست کے ڈبل شاہوں نے کہیں کا نہیں چھوڑا ۔ انھوں نے کہا کہ ڈبل شاہ عمران خان کو ان کی جمع پونجی سے محروم کر کے اپنے گناہ بھی ان کے سر ڈالنا چاہتے ہیں۔ مشاہداللہ خان نے کہا کہ عمران خان کو انصاف لینا ہے تو عدالت کا احترام اور ان کے آگے سر جھکانا سیکھیں ۔ انھوں نے کہا کہ اگر عدلیہ کا فیصلہ ہمارے خلاف آجائے تو عدلیہ غیر جانبدار اوران کی مرضی کے خلاف ہو تو جج بکے ہوئے ، اس دور نگی کو ختم کرنا ہوگا۔ مشاہداللہ خان نے کہا کہ حکومت چاہتی تو مریم نواز شریف کے خلاف ہائی کورٹ میں جاری کیس میں دفاع کرتی ۔ انھوں نے کہا کہ عدالت نے جو مہلت دی تھی اس دوران عدالت میں پیش ہوکر اسٹے آرڈر لیا جاسکتا تھا۔ مشاہداللہ خان نے کہا کہ مریم نوازشریف کی اپنے عہدے سے رضاکارانہ علیحدگی سے حکومت کو اخلاقی فتح حاصل ہوئی ۔انھوں نے کہا کہ مسلم لیگ(ن) اور مسلم لیگ (ن) کے قائد نوازشریف نے ہمیشہ اصولوں کی جنگ لڑی اور کبھی عہدے اور اقتدار کی ہوس اصولوں کے آڑے نہ آسکی ۔ مشاہداللہ خان نے کہا کہ عمران خان کے پاس اب بھی سنہرہ موقع ہے ، وہ آئیں اور مذاکرات کی میز پر بیٹھ کر تمام مسائل پر بامقصد بات کریں ۔ انھوں نے کہا کہ ہماری طرف سے عمران خان کو بند گلی سے نکالنے کے لئے بھرپور تعاون کیا جائے گا۔