Secretary Information addresses a group of students belonging to FATA

پاکستان کو فلاحی ریاست بناننے کا خواب چکنا چور نہیں ہونے دیں گے
کرپشن نے معیشت اور ادارے برباد کئے اور دہشت گردی نے معیشت کی بحالی کے لئے موجود انفراسٹرکچرتباہ کر ڈالا
فاٹا سمیت دیگر متاثرہ علاقوں میں ہر قیمت پر امن کی بحالی کو یقینی بنانے کے لئے تمام وسائل بروئے کار لار رہے ہیں
متاثرہ علاقوں کی تعمیر ِ نو کی لئے پرعزم ہیں تعلیم ، صحت اور روزگار کی فراہمی کے منصوبے بنائے جا رہے ہیں۔
ہم نے مذمتی بیانات کی بجائے عملی اقدامات کا آغاز کر دیا ، 7میں سے 6ایجنسیوں میں قانون کی رٹ قائم ہو چکی

پاکستان مسلم لیگ (ن) کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات سینیٹر مشاہد اللہ خان نے کہا ہے کہ پاکستان کو فلاحی ریاست بناننے کا خواب چکنا چور نہیں ہونے دیں گے ۔ کرپشن نے معیشت اور ادارے برباد کئے اور دہشت گردی نے معیشت کی بحالی کے لئے موجود انفراسٹرکچرتباہ کر ڈالا۔ انھوں نے کہا کہ ملکی کی ترقی فاٹا کی تعمیر و ترقی سے جڑی ہے ۔ فاٹا سمیت دیگر متاثرہ علاقوں میں ہر قیمت پر امن کی بحالی کو یقینی بنانے کے لئے تمام وسائل بروئے کار لار رہے ہیں ۔ دہشت گردی کے متاثرین کو زندگی کی تمام سہولیات مہیا کریں گے ۔ مشاہداللہ خان نے ان خیالات کا اظہار فاٹا سے آئے ہوئے طلباءسے ملاقات کے دوران کیا۔ انھوں نے کہا کہ متاثرہ علاقوں کی تعمیر ِ نو کی لئے پرعزم ہیں تعلیم ، صحت اور روزگار کی فراہمی کے منصوبے بنائے جا رہے ہیں۔ 2009ءمیں پارلیمنٹ کی طرف سے منظور کردہ 14نکاتی قرارد اد پر عمل ہوتا تو حالات مختلف ہوتے ۔ مشاہداللہ خان نے کہا کہ ہم نے مذمتی بیانات کی بجائے عملی اقدامات کا آغاز کر دیا ، 7میں سے 6ایجنسیوں میں قانون کی رٹ قائم ہو چکی ۔