Mushahid Ullah Khan statement on Federal Govt’s corruption and failures

 اب توحکومت کے اپنے من پسند احتساب بیورو نے بھی نئے احتساب قانون کو مکمل طورپرمسترد کردیاہے جس سے ظاہرہوتاہے کہ حکمران کس طرح اپنی کرپشن کی رقم کوتحفظ دینے کی ناکام کوشش کررہے ہیں ۔مشاہداللہ خان

حکومت اوراس کے اتحادی عوام کے مسائل حل کرنے میں ناکام ہوچکے ہیں اور فرارکاراستہ ڈھونڈنے کےلئے آئے روزنئے بہانے تراش رہے ہیں، عام انتخابات ہی ملک میں موجودبے ےقینی کے خاتمے اورتاریخ کی بدعنوان ترین اورنااہل حکومت سے نجات کی ضمانت فراہم کرسکتے ہیں ۔

حکمرانوں کی ترجیح صرف اورصرف کرپشن ہے اس کےلئے زرداری ٹولے کو عوام کے مسائل سے کوئی دلچسپی نہیں، اگرحکومت اپوزیشن کی مشاورت سے احتساب کا قانون منظورکرتی تو لوٹی ہوئی رقم واپس قومی خزانے میں آجاتی اورملک ترقی کی راہ پرگامزن ہوجاتا۔مرکزی سیکرٹری اطلاعات پاکستان مسلم لیگ(ن) کی وفدسے گفتگو

  (     )

پاکستان مسلم لیگ(ن) کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات سینیٹرمشاہداللہ خان نے کہاہے کہ حکومت اوراس کے اتحادی عوام کے مسائل حل کرنے میں ناکام ہوچکے ہیں اور فرارکاراستہ ڈھونڈنے کےلئے آئے روزنئے بہانے تراش رہے ہیں ۔مشاہداللہ خان نے کہاکہ عام انتخابات ہی ملک میں موجودبے ےقینی کے خاتمے اورتاریخ کی بدعنوان ترین اورنااہل حکومت سے نجات کی ضمانت فراہم کرسکتے ہیں ۔مشاہداللہ خا ن نے ان خیالات کا اظہارطلباءکے ایک وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہاکہ عوام جھولیاں اٹھااٹھاکرموجودہ حکومت سے نجات کی دعائیں کررہے ہیں ،پیپلزپارٹی کی حکومت اوراس کے اتحادیوں نے ملک کو ایک بارپھرپتھرکے زمانے میں دھکیل دیاہے ،مہنگائی اوربیروزگاری نے عوام کوغربت اورافلاس کے ساتھ ساتھ چاروں صوبوں میں رہنے والے شہریوں کی محرومیوں میں بے پناہ اضافہ کردیاہے ۔مشاہداللہ خان نے کہاکہ حکمران ٹولے کی ترجیحات میں ملک کے عوام کہیں بھی نظرنہیں آرہے ۔مشاہداللہ خان نے کہاکہ اس وقت ملکی معیشت کو سب سے بڑا خطرہ خودحکمران ٹولے اورانکی کرپشن سے ہے اوراب توحکومت کے اپنے من پسند احتساب بیورو نے بھی نئے احتساب قانون کو مکمل طورپرمسترد کردیاہے جس سے ظاہرہوتاہے کہ حکمران کس طرح اپنی کرپشن کی رقم کوتحفظ دینے کی ناکام کوشش کررہے ہیں ۔مشاہداللہ خان نے کہاکہ حکمرانوں کی ترجیح صرف اورصرف کرپشن ہے اس کےلئے زرداری ٹولے کو عوام کے مسائل سے کوئی دلچسپی نہیں ۔انہوں نے کہاکہ اگرحکومت اپوزیشن کی مشاورت سے احتساب کا قانون منظورکرتی تو لوٹی ہوئی رقم واپس قومی خزانے میں آجاتی اورملک ترقی کی راہ پرگامزن ہوجاتا۔مشاہداللہ خان نے کہاکہ پیپلزپارٹی اوراس کے اتحادیو ںنے ساڑھے چارسال کے دوران صرف اورصرف اپنے اقتدارکوطول دینے اورکرپشن کرنے میں صرف کردیئے ۔